حوزہ علمیہ جامعہ باب العلم میر گنڈ بڈگام میں حرمت محرم کانفرنس، علمائے دین عوام کو عزاداری کے وسیع مفہوم و مقاصد سے روشناس کریں: آغا حسن

بڈگام/ جموں و کشمیر انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے حوزہ علمیہ جامعہ باب العلم میر گنڈ بڈگام میں حرمت محرم کانفرنس منعقد ہوئی، کانفرنس کی صدارت انجمن شرعی شیعیان کے صدر حجت الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے کانفرنس میں شعبہ تبلیغ سے وابستہ علمائے دین اور تنظیم کے مرکزی اور مقامی ذاکرین نے خاص طورپر شرکت کی۔
معرکہ کربلا کی مناسبت سے ماہ محرم کی اہمیت اور اس حرمت والے مہینے میں رونما دیگر تاریخی واقعات پر علمائے دین نے تفصیلی روشنی ڈالی۔
جن علمائے دین نے اظہار خیال کیا ان میں حجت الاسلام سید محمد حسین گریند، حجت الاسلام سید یوسف الموسوی، حجت الاسلام آغا سید مجتبیٰ عباس الموسوی الصفوی، حجت الاسلام سید محمد صفوی، حجت الاسلام سید ارشد موسوی، حجت الاسلام مولوی گوہر حسین، حجت الاسلام مولوی محبوب الحسن شامل ہیں۔
مرکزی ذاکرین میں سے ذاکر سید طاہر الموسوی، ذاکر سید انیس الموسوی، ذاکر علی محمد نجار اور ذاکر غلام محمد ملہ نے بھی اظہار خیال کیا۔
شہدائے کربلا ؑکی عزاداری کو شہادت اعظمیٰ کی تشہیر و ترویج اور پیغام عاشورہ کی حفاظت کا ناگزیر پہلو قرار دیتے ہوئے علمائے دین نے اس بات پر زور دیا کہ عزاداری کی مجالس اور ماتمی جلوسوں کے دوران امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کے فریضے کی طرف خاص توجہ مرکوز کرنا چاہئے کیوں کہ قیام حضرت امام حسین ؑ کا سب سے بڑا مقصد امر بالمعروف ہے۔
اس موقعہ پر آغا صاحب نے کہا کہ عزاداری کی ترغیب اور تحریک ائمہ معصومین نے دی ہے تاکہ حق و باطل کے اس لامثال معرکہ کا ذکر ہمیشہ باقی رہے اور مسلمان پرچم اسلام کی سربلندی کے لئے ہمیشہ قربانیوں کے لئے آمادہ رہے۔
آغا صاحب نے کہا کہ عزاداری کو اس کے وسیع مفہوم اور ہمہ گیر مقاصد کے تناظر میں دیکھا جانا چاہئے،  عزاداری صرف شہدائے کربلا ؑ کے مصائب پر رونے رلانے تک محدود نہیں بلکہ تبلیغ دین سے لیکر تحفظ دین اور اصلاح معاشرہ کا ایک مکمل لایحہ عمل ہے۔
استقبال عزا کانفرنس میں طے پایا کہ علمائے دین اور ذاکرین حضرات عزاداری کے اجتماعات کے وساطت سے سماجی بدعات اور اخلاقی برائیوں کے خلاف ایک منظم مہم چلائیں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔