انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے وادی کے اطراف و اکناف میں اربعین تقریبات،  بڈگام اور زیلدار محلہ سرینگر میں اربعین کے مرکزی جلوس آغا حسن کی قیادت میں برآمد

بڈگامجموں و کشمیر انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے وادی کے اطراف و اکناف میں یوم اربعین کی تقریبات کا انعقاد ہوا مجالس عزا منعقد ہوئیں اور کئی مقامات پر یوم اربعین کے جلوس بر آمد کئے گئے۔

اربعین کے مرکزی جلوس تنظیم کے صدر حجت الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی الصفوی کی قیادت میں آستانہ شریف بڈگام تا امام باڑہ بڈگام اور زیلدار محلہ تا امام باڑہ حسن آباد سرینگر برآمد کئے گئے جن میں دسیوں ہزار عزاداروں نے شرکت کی ۔

مرکزی امام باڑہ بڈگام میں مجلس اربعین سے خطاب کرتے ہوئے آغا صاحب نے یوم اربعین کا تاریخی پس منظر اور تحریکی اہمیت بیان کی۔

آغا صاحب نے کہا کہ اربعین تحریک کربلا سے تجدید وفا کا ایک تاریخ ساز دن ہے اسی روز دو برگزیدہ اصحاب رسول ؐ حضرت جابر بن عبداللہ انصاری ؓ اور حضرت یحیٰ برمکی ؓ اپنے اقارب کے ساتھ وارد کربلا ہوئے، زیارت شہدائے کربلا ؑ انجام دی اور قبر امام حسین ؑ پر یزید کےجبر استبداد کے خلاف رائے عامہ منظم کرنے کا ارادہ ظاہر کیا۔

انہوں نے کہا کہ یوم اربعین کربلائے معلیٰ جاکر زیارت سید الشہدا ؑ بجا لانے کا ایک مخصوص دن ہے ائمہ معصومین ؑنے اربعین کے روز عزاداری اور زیارت شہدائے کربلا ؑ کی تاکید کر رکھی ہے۔

آغا صاحب نے کہا کہ چہلم شہدائے کربلا کے موقعہ پر کربلائے معلی میں سفر عشق کے نام سے دنیا کا سب سے بڑا اجتماع منعقد ہو رہا ہے اس سے یوم اربعین کی اہمیت اور افادیات اور بھی واضح ہو رہی ہے، اس سفر عشق کا تعلق حضرت امام حسین ؑ کے مشن انسانیت کے ساتھ ہے یہی وجہ ہے کہ اس کاروان عشق میں تمام مذاہب کے لوگ شامل ہو رہے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔