ماگام میں فوج نے شہید جنرل قاسم سلیمانی کا فوٹو اتارنے پر معافی مانگ لی، آغا سید حسن کا اہم بیان

(بڈگام) مولائے کائنات امیرالمؤمنین حضرت علی ابن ابیطالب علیہ السلام کی ولادتِ باسعادت کے موقع پر جموں کشمیر کے ماگام علاقے میں شیعہ جوانوں نے شہیدِ قدس، جنرل قاسم سلیمانی کے فوٹو لگائے جنہیں فوج کی جانب سے اتار دیا گیا جس کے بعد پورے علاقے میں جوانوں کی جانب سے شدید احتجاج شروع ہوگیا جس کو دیکھتے ہوئے فوج نے فوری طور پر معافی مانگتے ہوئے اپنی غلطی کا اعتراف کرلیا اور دوبارہ سے شہید قاسم سلیمانی کے فوٹو لگانے کی اجازت دیتے ہوئے اس بات کا اعتراف کیا کہ ان سے یہ غلطی ہوئی ہے۔

فوج کے اس اقدام کے بعد نوجوانوں نے ہر طرف لبیک یا حسین کے فلگ شگاف نعرے لگانے شروع کردیئے اور شہید قاسم سلیمانی کو اپنا رول ماڈل قرار دیتے ہوئے کہا کہ کسی کو بھی اس بات کی اجازت نہیں دی جائے گی کہ وہ ہمارے دینی اور مذہبی ہیرو شہید جنرل قاسم سلیمانی اور ان جیسے ہزاروں شہیدوں کی شان میں گستاخی کرے اور اگر کوئی ایسا کرتا ہے تو اسے ہمارے شدید غصے کا سامنا کرنا پڑے گا۔

دوسری طرف جموں و کشمیر انجمن شرعی شیعیان کے صدر، حجۃ الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے بھی بھارتی فوج کے اس اقدام کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے اقدامات جو کسی بھی قوم کے جذبات کو مجروح کرتے ہوں قابل قبول نہیں ہیں اور فوج کو کچھ بھی کرنے سے پہلے یہ سوچنا چاہیئے کہ انہیں کشمیری جوانوں کی طرف سے شدید مزاحمت کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

اسی کے ساتھ آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے فوج کی جانب سے معافی مانگنے کو خوش آئند قدم قرار دیتے ہوئے کہا کہ شہید جنرل قاسم سلیمانی ایک عظیم شخصیت کے حامل تھے جن کا احترام کرنا ہم سب کے لیئے ضروری ہے اور ہم ان کے خلاف کسی بھی قسم کی توہین برداشت نہیں کریں گے اور فوج نے معافی مانگ کر یہ ثابت کردیا کہ شہید قاسم سلیمانی دنیا بھر کے لیئے رول ماڈل تھے۔

آغا سید حسن نے مزید کہا کہ فوج کی جانب سے معافی مانگنا اس بات کی دلیل ہیکہ شہید قاسم سلیمانی ایک ایسی شخصیت تھے جن کا دشمن بھی احترام کرتے تھے اور اس کی وجہ ان کا ایمان، اخلاص، دین اور مذہب کے ساتھ ساتھ ولایت فقیہ کا مکمل مطیع ہونا تھا۔

آغا سید حسن نے ماگام کے جوانوں کی دلیری اور بہادری کو سلام کرتے ہوئے کہا کہ ایسے ہی جوان قوم کی شان اور پہچان ہوتے ہیں اور ہمیں اس طرح کے جوانوں پر فخر ہے اور ماگام کے جوانوں نے جس بہادری اور شجاعت کا مظاہرہ کیا ہے اس کی جتنی بھی تعریف کی جائے وہ کم ہے۔

آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے ان تمام جوانوں جنہوں نے فوج کے اس اقدام کے خلاف احتجاج کیا کے لیئے دعا کرتے ہوئے کہا کہ خداوند متعال سے دعا ہیکہ خدا ایسے جوانوں کو ہمیشہ سلامت رکھے اور انہیں امام زمانہ عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف کے حقیقیی سپاہیوں میں قرار دے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔