حیدر پورہ سرینگر فرضی انکائونٹر انسانیت کا درندانہ قتل ملوثین کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے: آغا سید حسن الموسوی

انجمن شرعی شیعیان کے صدر حجت الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے حیدر پورہ سرینگر میں حالیہ فرضی جھڑپ میں بے گناہ شہریوں کی ہلاکتوں پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اس سانحہ کو انسانیت کا درندانہ قتل قرار دیا اور اس سانحہ میں ملوث اہلکاروں کی نشاندہی کرکے انہیں کیفر کردار تک پہنچانے کا زور دار مطالبہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق مرکزی امام باڑہ بڈگام میں نماز جمعہ کے بھاری اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے آغا حسن نے کہا کہ اس طرح کے انسانیت سوز سانحات فورسز کو حاصل بے پناہ اختیارات کا شاخسانہ ہیں اور گزشتہ 30سال کے دوران اس نوعیت کے لاتعداد واقعات رونما ہو چکے ہیں اگر کسی ایک واقعے کی تحقیقات کے بعد ملوثین کو سزا دی گئی ہوتی تو ایسے سانحات بار بار رونما نہیں ہوتے آغا صاحب نے حیدر پورہ فرضی جھڑپ میں مارے گئے بے گناہ شہریوں کے لواحقین سے دلی ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایسے فسطائی حربوں سے کسی قوم کے جذبات اور خواہشات کا رخ تبدیل نہیں کیا جا سکتا۔

انہوں نے کہا کہ مسائل کے حل کا مہذب پر امن اور نتیجہ خیز طریقہ سنجیدہ مذاکرات ہےکشمیر تنازعہ بھی پر امن اور سنجیدہ مذاکرات کا تقاضہ کر رہا ہے اور موجودہ صورتحال میں مذاکرات کی اہمیت اور بھی بڑھ چکی ہے اس موقعہ پر آغا حسن نے بھارت میں ایک سال سے جاری کسان آندولن کی کامیابی کو اطمینان بخش قرار دیتے ہوئے ان کسانوں اور ان کے لیڈران کے صبر و استقامت کو داد دی آغا صاحب نے کہا کہ ایک سال تک کسانوںکے جائز مطالبات کو مسترد کرتے ہوئے مرکزی سرکار نے ان کسانوں کے آندولن کو ختم کرنے کے لئے ہر قسم کے اوچھے حربے استمعال کئے بالآخر سرکار کو کسانوں کے آگے سر تسلیم خم کرنا پڑا اسی طرح تنازعہ کشمیر کے فریقین کو دیر یا سویر مذاکراتی میز پر بیٹھنے کے سوا کوئی چارہ کار نہیں ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔