آستانہ شہید میر سید محمد دانیال ؒ ڈب گاندربل میں انجمن شرعی شیعیان کا آٹھواں ڈلگیٹ کنونشن،تنظیم ،تنظیمی منشور اور تنظیمی قیادت پر اراکین کا مکمل اعتمادبانی انجمن کو انکی برسی پر خراج 

بڈگام/ جموں و کشمیر انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے آستانہ شہید میر سید محمد دانیال ؒ ڈب گاندر بل میں تنظیم کے آٹھویں ڈلگیٹ کنونشن کا انعقاد ہوا کنونشن کی صدارت تنظیم کے صدر حجت الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے کی، کنونشن میں حالیہ تنظیمی انتخابات میں منتخب دہہ اور محلہ کمیٹیوں کےہزاروں اراکین نے شرکت کی اور تنظیم، تنظیمی نصب العین اور تنظیمی قیادت پر مکمل اعتماد اور تجدید وفا کا مظاہرہ کیا۔

نظامت کے فرائض پروفیسر محمود المہدی نے انجام دئے جبکہ تلاوت قرآن پاک کی سعادت قاری قمر علی صوفی نے حاصل کی۔

حجت الاسلام آغا سید مجتبیٰ عباس الموسوی الصفوی نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا اپنے خطبہ استقبالیہ میں آغا مجتبیٰ نے کہا کہ انجمن شرعی کی دینی سیاسی اور سماجی خدمات شیعیان کشمیر کی کسی بھی دوسری دینی جماعت سے نمایاں اور اولیٰ ہیں یہ کوئی مبالغہ نہیں بلکہ تاریخ شیعیان کشمیر میں مرقوم حقیقت ہے یہی وجہ ہے کہ حاسد عناصر کی تمام تر گمراہ کن مہم جوئیوں کے باوجود عوام انجمن شرعی کے ساتھ جڑے ہوئے ہیں اور یہ وابستگی اور عقیدت کبھی متزلزل نہیں ہو سکی۔

جن دیگر معززین نے کنونشن میں اپنے خیالات کا اظہار کیا ان میں حجت الاسلام سید محمد حسین گریند، حجت السلام سید یوسف الوموسی ،حجت الاسلام سید محمد صفوی، حجت الاسلام مولوی محبوب حسین ،سید محمد حسین حسینی سونہ پاہ، نثار حسین عالمگیر، غلام حسین شگنو اور مولوی محمد جعفر شامل ہیں۔

مقررین نے تنظیم اور تنظیم سازی کی ضرورت اور اہمیت پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ امر بالمعروف اور نہی عن المنکر ہر مسلمان کا فریضہ ہے اور اس فریضے کی اجتماعی ادائیگی کا سب سے نتیجہ خیز طریقہ تنظیم سازی ہے دین و ملت کی حفاظت اور سربلندی کے لئے تنظیمی سازی موجودہ دنیا میں ناگزیر ہے مقررین نے انجمن شرعی شیعیان کو عصر حاضر کے تقاضوں سے مکمل طور پر ہم آہنگ تنظیم اور اس کے آئین اساسی ایقاذالعباد کو ایک مکمل منشوری دستاویز قرار دیا۔

اپنے صدارتی خطبے میں انجمن شرعی شیعیان کے صدر حجت اسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے انجمن شرعی شیعیان کا تاریخی پس منظر بیان کرتے ہوئے کہا کہ انجمن شرعی شیعیان خطہ کشمیر میں شیعہ مسلک کے اولین داعی حضرت میر شمس الدین اراکی ؒ کے تبلیغی مشن کا تسلسل ہے جس کے لئے خود حضرت میر اراکی ؒ اور انکے فرزندان نے شہادتیں پیش کیں۔

انہوں نے کہا کہ تنظیم کی خدمات کا دائرہ 6سو سال پر محیط ہے جبر و قہر کے چار سو سالہ دور میں کس طرح حضرت میر اراکی ؒ کی نسل سے وابستہ علمائے دین نے گوشہ نشینی کی حالت میں یہاں شیعہ مسلک کے وجود کو قائم رکھا وہ بذات خود ایک معجزے سے کم نہیں۔

آغا صاحب نے کہا کہ جس تبلیغی مشن کی بدولت ہمیں اسلام کی نعمت ملی اور ہم دامان ولایت وامامت سے وابستہ ہیں اس مشن کی آبیاری نہ صرف ایک شرعی فریضہ ہے بلکہ شکران نعمت کالازمی تقاضا ہے۔

اس موقعہ پر آغا صاحب نے بانی انجمن شرعی شیعیان آیت اللہ آغا سید یوسف الموسوی الصفوی ؒ کو انکی برسی پر شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ بانی انجمن نے تنظیم کی داغ بیل ڈال کر اپنے آباؤ اجدا کے اقامت دین کے نصب العین کو آئندہ نسلوں کے لئے محفوظ رکھایہ موصوف کا ایک تاریخی اقدام تھا کنونشن میں گرانقدر تنظیمی خدمات انجام دینے والے فعال اراکین کو توصیفی اسناد اور ایسے متوفی اراکین کے حق میں لوح خراج عقیدت اجرا کی گئی۔

کنونشن کے اختتام پر جناب غلام محمد ناگو صاحب نے ایک قرارداد پیش کی جس کو اتفاق رائے سے پاس کیا گیا قرارداد میں کہا گیا کہ یہ اجتماع تنظیم، تنظیمی منشور اور تنظیمی قیادت سے غیر متزلزل اعتماد کا اظہار کرتا ہے اور خطہ کشمیر میں زمانہ قدیم سے دینی خدمات انجام دینے والے تبلیغی خانوادوں کے علمائے دین، دینی انجمنوں اور مصنفین کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے اسلاف علماے دین کو خراج نذرکرتا ہے، دینی معاملات میں مداخلت اور شان رسول ؐ میں گستاخیوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتا ہے، یہ اجتماع واضح کرتا ہے کہ شیعہ مسلک میں سرکاری وقف بورڈ کی کوئی گنجائش نہیں ایسا کوئی بھی اقدام جبری اقدام ہوگایہ اجتماع نظام ولایت فقیہ کے ساتھ مکمل وابستگی کا عزم دہراتا ہے بالی ووڈ فلم کشمیر فائلز کو فرقہ وارانہ بھائی چارے کے لئے انتہائی نقصان دہ تصور کرتا ہے اور فلم میں امام خمینیؒ کی تصویر کے غلط استعمال اور کشمیر میں شیعہ مسلک کے معروف داعی حضرت میر شمس الدین اراکی ؒ کی کردار کشی کے خلاف شدید ردعمل کا اظہار کرتا ہے، یہ اجتماع انجمن شرعی شیعیان اور انجمن کی قیادت کے خلاف حاسد اور مفاد خصوصی رکھنے والے عناصر کی طرف سے سوشل میڈیا پر آئے روز گمراہ کن پروپیگنڈے کی مذمت کرتے ہوئے ان عناصر کو چیلینج کرتا ہے کہ اگر وہ سچے اور پر مخلص ہیں تو اپنی شناخت چھپانے کے بجائے کھل کر سامنے آئیں.

https://www.facebook.com/129979143698343/posts/pfbid02m7Rf1uak3orfdsdKkQRL2JPF3k845Uuzev8y3tYVVrqSzWwujr3bFESnzD54scAUl/

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔